Urdu poetry | Urdu shayari | Urdu ghazal | Urdu stories | Poem

Urdu Poetry


Main jo tum se mila hun
Is dunia mein
Kon kon mujh se jala hoga

Urdu ghazal

urdu-poetry

Urdu Poetry


Meri aahun ka yahi sila hoga
Yahi naseeb ki takhti par
likha hoga
Main jo tum se mila hun
Is dunia mein
Kon kon mujh se jala hoga
Main tum ko ik waqia suna
kar khamosh hun ga
Tum meri chup mein
Dardon k ajab saaz mehsoos
karna
Wo jis din tum ko
Main apni aankhun mein
Ik lamha bharne k liye
Hazaron meel chal kar
Tumhare nagar gya
Khuda to sun raha hai
Main us ka naam le kar
Sach kahun ga
Woo ik lamha jis ki khatir
Main itna chala tha
Woo mere jiwan mein kab aaya
Kab beeta
Mujhy guma’n tak na hua
K aankhun se dil mein
Tumhari surat jo banti jae
Woo kon hoga jana’n!
Jo phir bhi saans le pae
Tum jo aankhun se dil mein utre
Koi anokha hi sanson mein
Hiddat ka tufaan aaya
K khuda ko pata ho
Kiun meri aankhun ko
Tum koi ghair lage thy
Tum to nada’n ho
Tumhein guma’n tak na hua
K meri aankhun ka
Tumhare wajood par
jo thehrao tha
Wo meri zaat ka sakta tha
Lehja sakht ho to maaf karna
Teri aankhun mein
Kisi ghair ki tasveer thi
Koi anokha tha
Meri aankhun ka
Mere dil ko batana
Main kabhi na bhool paun ga
Mujhy kha gya hai
Wo tera mujh se
Teri aankhun ko churana
Main to mot se
Jiwan ki justaju mein
Tere paas gya tha
Par tujh se mil kar
Ghutti sanson se
Ghutte huye dil se
Unhi qadmon par
Mot ki justaju mein
Main lot aaya tha

Urdu Poetry

CLICK HERE

CLICK HERE

 

میری آہوں کا یہی صلہ ہو گا
یہی نصیب کی تختی پر
لکھا ہو گا

مَیں جو تُم سے ملا ہوں
اس دنیا میں
کون کون مُجھ سے
جلا ہو گا

مَیں تُم کو اِک واقعہ سُنا کر
خاموش ہوں گا
تم میری چُپ میں دردوں کے
عجب ساز محسوس کرنا

وہ جِس دن تم کو
میں اپنی آنکھوں میں
اِک لمحہ بھرنے کے لیے
ہزاروں میل چل کر
تمہارے نگر آیا

خدا تو سُن رہا ہے
مَیں اُس کا نام لے کر
سچ کہوں گا

وہ اِک لمحہ جس کی خاطر
مَیں اِتنا چلا تھا
وہ میرے جیون میں
کب آیا، کب بیتا
مُجھے گماں تک نہ ہُوا

کہ آنکھوں سے دل میں
تمہاری صورت جو بنتی جاۓ
!وہ کون ہو گا جاناں
جو پھر بھی سانس لے پاۓ

تم جو آنکھوں سے
دل میں اترے
کوئی انوکھا ہی سانسوں میں
حدّت کا طوفان آیا

خدا کو پتہ ہو
کیوں میری آنکھوں کو
تم کوئی غیر لگے تھے

  تم تو ناداں ہو
تمھیں گماں تک نہ ہُوا
کہ میری آنکھوں کا
تمہارے وجود پر
جو ٹھہراؤ تھا

وہ میری ذات کا سکتہ تھا

لہجہ سخت ہو تو معاف کرنا
تیری آنکھوں میں
کسی غیر کی تصویر تھی

کوئی انوکھا تھا
میری آنکھوں کا
میرے دل کو بتانا

میں کبھی نہ بھول پاؤں گا
مجھے کھا گیا ہے
وہ تیرا مُجھ سے
تیری آنکھوں کو چرانا

مَیں تو موت سے
جیون کی جُستجو میں
تیرے پاس گیا تھا

پر تُجھ سے مل کر
گھٹی سانسوں سے
گھٹے ہوئے دل سے

اُنہی قدموں پر
موت کی جستجو میں
مَیں لوٹ آیا تھا۔۔۔

Life Quotes

 

♥(1)♥
Apne shishe numa yaqi’n ki
tuti bikhri huyi kirchiun ko
Apne hathun se masal masal
kar
Apne haath rangeen karne se
bihtar hai k apne yaqi’n ki
nazaqat ka khayaal aap khud
rakhein.

♥(2)♥
Zuba’n par jhoot k kante
Aur duhai yaqee’n yaqee’n ki

Afsos hai ease logun par
Joo yaqeen ko itna sasta
Aur be’mol samajhte hain.

This urdu poetry is written by  Mutee ul Hussnain.

Give a Comment